تکبر اقوال

٭تجھ کو لوگ تکبر کرنے سے بڑا نہیں سمجھ سکتے بلکہ تو تواضح سے بڑا ہو گا۔ حضرت بایزید بسطامی

٭ گناہوں پر نادم ہونا ان کو مٹا دیتا ہے اور نیکیوں پر تکبر یا غرور کرنا ان کو برباد کر دیتا ہے۔

٭ اپنے آپ کو اتنا ہی ظاہر کر جتنا کہ تو ہے یا ویسا ہو جیسا اپنے آپ کو ظاہر کرنا چاہے۔

٭ اگر غرور کوئی علم ہوتا تو اس کے سند یافتہ بہت ہوتے۔

٭ جوانی کے غرور میں نہ آ جا کیونکہ بوڑھا ہونے سے پہلے بھی کئی جوان گزرے ہیں۔

٭ مغرور شخص کا کوئی دوست نہیں ہوتا کیونکہ دوستی میں مساوات کی ضرورت ہوتی ہے جو اس کو پسند نہیں۔

٭مغرور کو کوئی نصیحت نہیں کرسکتا، اس لیے کہ ناصح ہونے میں برتری کی ضرورت ہے جس سے اسے نفرت ہے۔

٭ شجرہ نسبت کے سائے میں پناہ لینے والا دنیا میں کوئی جگہ حاصل نہیں کر سکتا۔

٭ بعض لوگ اچھا بننے کے لیے اتنی بھی کوشش نہیں کرتے جتنا اچھا نظر آنے کے لیے کرتے ہیں۔

٭ اگر لوگ تجھے اس صفت کے ساتھ موصوف بتلائیں جو کہ تیری ذات میں نہ ہو تو ان کی تعریف سے مغرور مت ہو جا کیوں کہ جاہلوں کے کہنے سے ٹھیکری سونا نہیں بن سکتی۔ حکیم لقمان ٭

انسان کا فخر اس میں ہے کہ فخر نہ کرے اور باوجود بڑا ہونے کے اپنے آپ کو کمتر خیال کرے۔ افلاطون

٭ بزرگ کی تین نشانیاں ہیں، اول دوسرے لوگ اسے بزرگ سمجھیں، دوم وہ خود اپنے تئیں بزرگ نہ جانے، سوم جب مصیبتوں میں گھر جائے تو سچائی کو نہ چھوڑے۔ زرتشت

٭ خوبصورت و بدسورت سب مخلوق خدا ہیں، سب کا باوا آدم ایک ہے اور سب کی اصل خاک ہے پھر اپنی صورت پر تکبر اور غرور کرنا اور بدصورتوں سے نفرت کرنا انسانیت سے بعید ہے۔

٭ غرور عقل کے لیے ایک آفت ہے۔ ٭

تکبر خوش پوشی اور اچھی حالت رکھنے کا نام نہیں بلکہ لوگوں کا حقیر جاننے کا نام ہے۔

٭ اصل بڑائی وہی ہے جو تمھاری اپنی ذات میں ہو، بڑے اپنی بڑائی ساتھ لے کر جایا کرتے ہیں۔

٭ متکبروں کے پاس جا کر اپنی انسانیت کا خون نہ کیا کرو۔

٭ جو چاہو پہنو بشرطیکہ اندر گھمنڈ و تکبر اور اسراف نہ ہو۔ حضرت عبد اللہ بن عباس

٭ نیک بخت وہ ہے جو نیکی کرے اور ڈرے اور بد بخت وہ ہے جو بدی کرے اور اکڑے۔

٭ کسی نے بایزید بسطامی سے پوچھا کہ متکبر کس کو کہتے ہیں، فرمایا جو شخص تمام عالم میں اپنے سے زیادہ کوئی چیز خبیث سمجھے۔

٭ تواضح یہ ہے کہ تو درویشوں سے تواضح کرے اور امیروں سے تکبر۔ حضرت بایزید بسطامی

٭ خوشامدی لوگ تیرے لیے تکبر کا تخم ہیں۔ امام جعفر صادق 

٭کسی آدمی کو جب اس کی بساط سے زیادہ دنیا مل جاتی ہے تو لوگوں کے ساتھ اس کا رویہ متکبرانہ ہو جاتا ہے۔


Share Takabur Quotes in Urdu

Add More Takabur Quotes